ورلڈ الیون سے کامیاب سیریز آسٹریلیا کو متاثر نہ کر پائی

میلبورن: 

ورلڈ الیون سے کامیاب سیریز آسٹریلیا کو متاثر نہ کر پائی، بورڈ نے فی الحال دورئہ پاکستان کو خارج ازامکان قرار دے دیا۔

 

آزادی کپ سیریز کیلیے پاکستان آنے والی ورلڈ الیون میں آسٹریلوی کرکٹرز جارج بیلی،بین کٹنگ اور ٹم پین شامل تھے،پی سی بی سری لنکا اور ویسٹ انڈیز کی میزبانی کا بھی پلان بنا رہا ہے،توقع کی جا رہی ہے کہ بتدریج اعتماد کی بحالی کے مراحل طے کرنے کے بعد کینگرو ٹیم بھی پاکستان آئے گی،مگر آسٹریلیا نے فی الحال کسی ٹور کو خارج ازامکان قرار دیدیا۔

کرکٹ بورڈ کے چیف ایگزیکٹیو جیمز سدر لینڈ کا کہنا ہے کہ کسی ملک میں جانے کا فیصلہ کریں تب ہی سیکیورٹی معاملات کا جائزہ لیتے ہیں،گرین شرٹس کے ساتھ آئندہ سیریز یواے ای میں ہونے کی توقع ہے۔انھوں نے کہا کہ پاکستان نے اچھی پیش رفت کی،ورلڈ الیون کا دورہ بھی خوش آئند ہے، میری نیک خواہشات ہیں کہ پاکستان اس پوزیشن پر آجائے کہ انٹرنیشنل ٹیموں کے باقاعدگی سے دورے ہوں،فی الحال موجودہ حالات میں میرے ملے جلے جذبات ہیں، ہم اپنے کرکٹرز کی سیکیورٹی کے معاملات میں کسی مصلحت سے کام نہیں لیتے، اگر پاکستان کے ٹور کا فیصلہ ہوا تو جائزہ لینے کیلیے ماہرین بھیج سکتے ہیں، مگر پہلی بات یہ ہے کہ حالات ایسے ہوں کہ ہم وہاں جاکر میچز کے بارے میں سوچ سکیں۔

 

 

یاد رہے کہ پاکستان اور آسٹریلیا کے مابین آئندہ سیریز 18ماہ بعد ہوگی۔