Category: لاہور
Published on 04 March 2015

کنٹینر پر بیٹھ کر خدائی دعوے کرنیوالے آج رو رہے ہیں، عابد شیر علی

لاہور: وزیرمملکت پانی وبجلی عابدشیر علی نے کہاہے ہمیں اپنے اراکین پر رتی برابر بھی شک نہیں سینیٹ کے انتخابات میں وہ ہمارے امیدواروں کو ہی ووٹ دیں گے۔

ایکسپریس نیوز کے پروگرام کل تک میں میزبان جاوید چوہدری سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ جو کنٹینر پر بیٹھ کر لوگوں کو باتیں کرتے تھے آج وہ اپنے ہی لوگوں سے ڈر رہے ہیں، یہ اپنے لوگوں کو باضمیر کہتے تھے لیکن اب یہ رو رہے ہیں ہم تو نہیں رورہے۔ یہ کنٹینر پر کھڑے ہوکر خدائی دعوے کرتے تھے لیکن آج خدا نے ان کو دکھا دیا ہے۔ پنجاب اسمبلی میں کوئی بکاؤ ایم پی اے نہیں ہے کے پی کے میں بھی امید ہے کہ ہمارا کوئی ایم پی اے انیس بیس نہیں کریگا، کل تک یہ آصف زرداری کو بہت باتیں کرتے تھے آج انہوں نے کس منہ سے آصف زرداری سے بات کرنے کے لئے فون کیا، اس وقت کے پی کے میں چور مچائے شور والی بات ہے۔

پی ٹی آئی کے رہنما اسحاق خاکوانی نے کہا ہے کہ سینیٹ کے الیکشن میں جو لوگ ڈاکے ڈال رہے ہیں ان کیخلاف کارروائی ہونی چاہئے، کے پی کے میں ہمارے ایم این اے اور ایم پی ایز کو خریدنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ عوامی نیشنل پارٹی کے سینیٹر الیاس احمد بلورنے کہا ہے کہ سینیٹ الیکشن میں اس مرتبہ کچھ زیادہ ہی آوازیں بلند ہورہی ہیں۔ ہمارے ووٹوں کو خریدنے کیلئے کوئی ہمیں آفر ہی نہیں کرسکتا ہمیں اپنے لوگوں پر فخر ہے اعتماد ہے۔


Category: لاہور
Published on 09 December 2014

الیکشن کمیشن میں آپریشن کلین اپ کی ضرورت ہے، شاہ محمود قریشی

سلام آباد: تحریک انصاف کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ چیف الیکشن کمشنربااعتماد انسان ہیں جب کہ چاروں صوبائی ارکان متنازع ہیں اس لئے الیکشن کمیشن میں آپریشن کلین اپ کی ضرورت ہے۔

اسلام آباد میں نئے چیف الیکشن کمشنر سردار محمد رضا سے ملاقات کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ملک میں شفاف انتخابات کا بیٹرا تحریک انصاف نے اٹھا رکھا ہے، الیکشن کمیشن کی ساکھ بحال کرنا سردار محمد رضا کے لئے چیلنج ہوگا تاہم پی ٹی آئی ان سے بھرپور تعاون کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ الیکشن کمیشن کو صاف کرنے کی ضرورت ہے اگر یہ نہ کیا گیا تو آئندہ بھی غلطیاں سامنے آتی رہیں گی، بدقسمتی سے چیف الیکشن کمشنر کی ذات کے علاوہ دیگر چار ممبران ہماری نظر میں متنازع ہیں۔

پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ بیلٹ پیپرزچھاپنا الیکشن کمیشن کی بنیادی ذمے داری ہے لیکن اب وہ متنازع ہوچکی کیوں کہ الیکشن کمیشن نے بیلٹ پیپرز چھاپنے کے حوالے سے 4 بار اپنا موقف تبدیل کیا اور پہلے کہا گیا کہ بیلٹ پیپرز چھاپے ہی نہیں اور پھر 8 لاکھ اور پھر ایک کروڑ سے زائد بیلٹ پیپرز چھاپنے کا اعتراف کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ نئے چیف الیکشن کمشنر کے آنے سے حوصلہ ہوا لیکن حالیہ انتخابات میں غلطیوں کے مرتکب افراد کو ہٹائے جانے کے بغیر شفاف انتخابات ممکن نہیں۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ نئے چیف الیکشن کمشنر کے سامنے چند تجاویز رکھی ہیں کہ ہمیں پولنگ اسکیم پر تشویش ہے اس لئے بائیو میٹرک سسٹم کے ذریعے شفاف انتخابات کرائے جائیں جب کہ سردار محمد رضا کے سامنے بیلٹ پیپرز کے معاملے کو بھی اٹھایا ہے۔


Category: لاہور
Published on 29 November 2014

بھکر کے حلقہ پی پی 48 کے ضمنی انتخاب میں آزاد امیدوار انعام اللہ نیازی کو برتری

ھکر: پنجاب اسمبلی کے حلقے پی پی 48 میں ضمنی انتخاب کے لئے پولنگ کے بعد ووٹوں کی گنتی جاری ہے جس میں ابتدائی نتائج کے مطابق آزاد امیدوار انعام اللہ نیازی کو برتری حاصل ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق پی پی 48 بھکر میں پولنگ کا عمل صبح 8 بجے شروع ہوا جو شام 5 بجے تک جاری رہا، پی پی 48 بھکر میں رجسٹرڈ ووٹر کی تعداد ایک لاکھ 52 ہزار ہے جن میں 85 ہزار 996 مرد ووٹرز جب کہ خواتین ووٹرز کی تعداد 66 ہزار سے زائد ہے، ووٹنگ کے لئے حلقے میں 144 پولنگ اسٹیشنز قائم کئے گئے تھے جن میں سے 14 کو حساس قرار دیا گیا، کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لئے سیکیورٹی کے بھی انتہائی سخت انتظامات کئے گئے تھے۔

بھکر کے حلقے میں ضمنی انتخاب کے لئے مجموعی طور  پر  7 امیدوار میدان میں ہیں جن میں سے انعام اللہ نیازی اور احمد نواز نوانی آزاد امیدوار کی حیثیت سے میدان میں اترے ہیں جبکہ نذر عباس عوامی تحریک کے ٹکٹ پر الیکشن لڑرہے ہیں، حلقہ 48 میں پولنگ مکمل ہونے کے بعد ووٹوں کی گنتی جاری ہے جس میں اب تک 20 پولنگ اسٹیشن کے غیر حتمی وغیر سرکاری نتائج کے مطابق آزاد امیدوار انعام اللہ نیازی کو برتری حاصل ہے جو 4869 ووٹ لے کر آگے ہیں جبکہ دوسرے آزاد امیدوار احمد  نواز نوانی 3572 ووٹ لے کر دوسرے اور عوامی تحریک کے نذر عباس 3160 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر ہیں۔

واضح رہے کہ پی پی بھکر 48 کی نشست رواں برس اکتوبر میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے امیدوار نجیب اللہ نیازی کے انتقال کے بعد خالی ہوئی تھی۔


Category: لاہور
Published on 29 November 2014

’’لفظی فائرز‘‘ کے بعد چیئرمین بورڈ نے ہتھیار ڈال دیے

لاہور: ’’لفظی فائرز‘‘ کے بعد چیئرمین بورڈ نے ہتھیار ڈال دیے، انھوں نے ٹیم منیجرمعین خان کو ورلڈکپ 2015 تک چیف سلیکٹر بھی برقرار رکھنے کا اعلان کر دیا ہے۔

اس سے قبل وہ کئی بار ان سے ایک ذمہ داری واپس لینے کا کہہ چکے تھے۔اسپن بولنگ کوچ مشتاق احمد کا ڈبل رول بھی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا، شہریار خان کے مطابق سلیکشن کمیٹی کے ارکان کی تعداد 6 کے بجائے 4 کرکے جونیئر چیف سلیکٹر کو شامل کرلیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز لاہور میں گورننگ بورڈ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے چیئرمین پی سی بی شہریار خان نے کہاکہ ٹیم مینجمنٹ میں شامل 10 میں سے 7 عہدیداروں سے ایک ایک عہدہ واپس لیا جائیگا تاہم مشتاق احمد، معین خان اور عائشہ اشعر کو دوہری ذمہ داری ادا کرنے کی اجازت ہوگی۔ شہریار خان نے واضح کیا کہ معین خان ورلڈ کپ 2015ء تک ٹیم منیجر کے عہدہ پر کام کرتے رہیں گے۔

انھوں نے کہا کہ بورڈ نے سلیکشن کمیٹی ارکان کی تعداد 4 کرنے کا فیصلہ کیا ہے، اس میں جونیئر سلیکشن کمیٹی کا سربراہ بھی شامل ہوگا، نئی کمیٹی دسمبر کے پہلے ہفتے میں تشکیل دے دی جائے گی۔ شہریار خان نے کہا کہ پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کے دروازے کھل رہے ہیں، پہلے مرحلے میں آئرلینڈ، ہالینڈ اور زمبابوے کو لانے کی کوشش کررہے ہیں تاہم بڑی ٹیموں کی راہ ہموار کرنے کیلیے مزید 2 سے 3 سال کا عرصہ لگے گا۔ایک سوال پر شہریار خان نے کہا کہ گورننگ بورڈ کے اجلاس میں آڈٹ رپورٹ پیش کی گئی جس میں کچھ ارکان نے اعتراضات بھی اٹھائے۔