Category: کراچی
Published on 02 September 2015

کراچی: پٹیل پاڑہ میں واقع نجی اسکول میں زیر تعلیم لڑکے نے لڑکی کو قتل کرنے کے بعد خود بھی اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔ کراچی کے علاقے پٹیل پاڑہ کے ایک نجی اسکول میں زیر تعلیم 16 سالہ لڑکے نے اسمبلی کے دوران اپنے ساتھ زیر تعلیم لڑکی کو فائرنگ کرکے قتل کردیا

کراچی: پٹیل پاڑہ میں واقع نجی اسکول میں زیر تعلیم لڑکے نے لڑکی کو قتل کرنے کے بعد خود بھی اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔

کراچی کے علاقے پٹیل پاڑہ کے ایک نجی اسکول میں زیر تعلیم 16 سالہ لڑکے نے اسمبلی کے دوران اپنے ساتھ زیر تعلیم لڑکی کو فائرنگ کرکے قتل کردیا جس کے بعد اسی پستول سے خود کو بھی گولی مارلی۔ دونوں موقع پر ہی دم توڑ گئے، پولیس نے لاشوں کو قریبی اسپتال منتقل کردیا جہاں قانونی کارروائی کے بعد ان کی لاشیں والدین کے سپرد کردی گئیں۔


Category: کراچی
Published on 31 August 2015

رشید گوڈیل کو جلد گھرمنتقل کردیا جائے گا، ترجمان اسپتال

کراچی: قاتلانہ حملے میں زخمی ہونے والے متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما رشید گوڈیل کی حالت تیزی سے بہترہورہی ہے جب کہ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ انہیں جلد گھر منتقل کردیا جائے گا۔

لیاقت نیشنل اسپتال کے ترجمان کا کہنا ہے کہ رشید گوڈیل کا معائنہ کرنے والی 18 رکنی میڈیکل ٹیم نے ان کی حالت میں بہتری پر اطمینان کا اظہار کیا ہے اور انہیں جلد ہی اسپتال سے گھر منتقل کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ رشید گوڈیل کے زخم بہتر ہونا شروع ہوگئے جب کہ انہیں کھانے کو نرم غذا بھی دی جارہی ہے اور ساتھ ہی ساتھ چہل قدمی بھی کرائی جارہی ہے۔

واضح رہے کہ 18 اگست کو نامعلوم موٹرسائیکل سواروں نے بہادرآباد کے علاقے میں ایم کیو ایم کے رہنما رشید گوڈیل کو نشانہ بنایا تھا جس میں ان کا ڈرائیورموقع پرجاں بحق اوروہ شدید زخمی ہوگئے تھے۔


Category: کراچی
Published on 31 August 2015

وسیم اکرم نے گاڑی پر فائرنگ کرنے والے ملزم کو معاف کردیا

کراچی: قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وسیم اکرم نے ان کی گاڑی پر فائرنگ کرنے والے ملزم میجر ریٹائر عامر رحمان کو معاف کردیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان کا کہنا تھا کہ ان کی گاڑی پرفائرنگ کرنے والے میجر(ر) عامر رحمان نے انہیں معافی کا میسج کیا جس پر انہوں نے اسے معاف کردیا جب کہ ان کا کہنا تھا کہ میں معاف کرنے اور آگے بڑھنے پر یقین رکھتا ہوں اور دنیا ميں کہیں اورنہيں صرف پاکستان میں رہنا چاہتا ہوں، پاکستان میرا ملک ہے میں یہاں سیکیورٹی لے کر نہيں چلتا۔

اس سے قبل وسیم اکرم نے معافی نامہ قبول کرنے کے لیے 2 شرائط رکھی تھیں جن میں عامر رحمان کا اسلحہ لائسنس اور گاڑی کے ڈرائیورکا  ڈرائیونگ لائسنس منسوخ شامل تھا جس پر میجر ریٹائرڈ عامر رحمان نے وسیم اکرم کی دونوں شرائط منظور کرلی تھیں اور اس حوالے سے عامر رحمان کا اسلحہ لائسنز منسوخ کرنے کا لیٹر بھی جاری کردیا گیا ہے۔


Category: کراچی
Published on 31 August 2015

سانحہ صفورا کے مرکزی دہشت گرد طاہر کے ’’کوڈورڈز‘‘ مل گئے

کراچی: سانحہ صفورا کے مرکزی دہشت گرد طاہر کے ’’کوڈورڈز‘‘تحقیقاتی پولیس نے حاصل کرلیے ہیں جبکہ دہشت گردوں کے کپڑوں پر لگے خون کے دھبے جاں بحق افراد کے خون کے نمونے سے میچ کرگئے۔

ذرائع کے مطابق سانحہ صفورامیں ملوث دہشت گردوں سے تحقیقات کرنے والی جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم نے سانحہ صفوراکے مرکزی ملزم طاہرعرف سائیں کے کوڈ ورڈز ملزم کے گھر سے برآمد کیے جانے والے کمپیوٹر سے حاصل کرلیے ہیں ، ملزم طاہر عرف سائیں نے اپنے ساتھیوں کوانٹرنیٹ پر کہا تھا کہ آگ کے دریا پر آجاؤ جس کا مطلب گلستان جوہر میں کڑھائی کے ہوٹل آجاؤ، مسجد میں ملیں گے، اس کا مطلب اورنگی ٹاؤن کی مسجد میں مغرب کے بعد ملنا ہے، مٹھائی کی دکان پرآ جاؤ، اس کا مطلب پہلوان گوٹھ میں چائے کے ہوٹل پرآجاؤ۔

جے آئی ٹی ذرائع نے بتایا کہ ملزم طاہر عرف سائیں اگراپنی بتائی ہوئی جگہ نہیں آسکاتواس کے ساتھی روزانہ مقررہ وقت پر اسی مقام پر چکر لگاتے رہیں گے، ملزم طاہر انتہائی چالاک اور ہوشیار ہے اور وہ کچھ عرصے بعد اپنے ٹھکانے تبدیل کرتا رہتا تھا ملزم طاہرعرف سائیں یونیورسٹی کے طالب علموں کو اپنے جال میں پھنساک ر ان سے دہشت گردی کی واردات کرتاتھا۔

ذرائع نے بتایا کہ سانحہ صفورامیں ملوث دہشت گردوں نے اسماعیلی کمیونٹی کے بس پرفائرنگ کے وقت پہننے ہوئے کپڑوں پرخون کے داغ لگ جانے کے باعث فرارہوتے ہوئے ایک مقام پر پھینک کرانھیں جلا دیاتھا تاہم کپڑے مکمل جل نہیں سکے تھے تفتیش کے دوران پولیس نے دہشت گردوں کی نشاندہی پر سپر ہائی وے سے خون آلود کپڑے برآمد کر لیے تھے جن پرخون کے دھبے موجود تھے اور پولیس نے فائرنگ کے واقعے میں جاں بحق ہونے والے افراد کے خون کے نمونے ڈی این اے ٹیسٹ کے لیے لیاقت میڈیکل یونیورسٹی جام شورو میں قائم لیب میں بھجوائے تھے جہاں دہشت گردوں کے کپڑوں پر لگے خون کے دھبے جاں بحق افرادکے خون کے نمونوں سے میچ کرگئے جسے تفتیشی ذرائع کی جانب سے بڑی اہمیت دی جارہی ہے۔