Published on 21 July 2017

سپریم کورٹ کا فیصلہ آئین اورقانون کے مطابق ہوگا، مریم اورنگزیب

سلام آباد: 

وزیر مملکت برائے اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ پاناما کیس میں سپریم کورٹ کا فیصلہ ملک کے آئین اور قانون کے مطابق ہوگا۔

 

سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر مملکت مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ جے آئی ٹی پر تحفظات ڈھکی چھپی بات نہیں اور تمام ثبوت پاکستان کےعوام کے سامنے آئیں گے، 3 عدالتوں سے مفرور منتخب وزیراعظم سے استعفیٰ مانگ رہا ہے، رپورٹ کی جلد نمبر  10 کھولنے کی درخواست شریف خاندان نے کر رکھی ہے، ہرچیز کو پاناما کیس کے ساتھ جوڑنا ختم ہونا چاہئے۔ اعلیٰ عدلیہ کے احترام ہمیشہ قائم رہا ہے جب کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ پاکستان کے آئین اور قانون کے مطابق ہوگا۔

وزیرمملکت مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ ملک میں دہشت گردی کے واقعات میں کمی آئی ہے ، وزیر اعظم کی چوہدری نثار سے کسی قسم کی کوئی ناراضگی نہیں، وہ (ن) لیگ کے سپاہی ہیں، وہ 24،24 گھنٹےکام کرتے ہیں۔ ان کی جہاں جہاں ضرورت تھی وہ موجود تھے اور اس معانملے میں ان کی مشاورت بھی شامل رہی ہے


Published on 20 July 2017

نواز شریف کے لیے اڈیالہ جیل میں جگہ تیار ہورہی ہے، عمران خان

 اسلام آباد: 

پاکستان تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ وہ نواز شریف سے استعفیٰ نہیں مانگ رہے کیونکہ یہ اڈیالہ جیل جائیں گے وہاں ان کے لیے جگہ تیار ہورہی ہے۔

 

اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ جمہوریت میں وزیراعظم جوابدہ ہوتا ہے، پاناما پیپرز میں کوئی سازش نہیں، جب یہ معاملہ سامنے آیا تو نواز شریف نے بار بار عوام سے کہا کہ وہ اپنے اور خاندان کے احتساب کے لیے تیار ہیں، نوازشریف نے قومی اسمبلی میں دستاویزات دکھائی تھیں لیکن حقیقت میں ان کے پاس کوئی دستاویز نہیں جب کہ ان کے پاس وقت بہت کم ہے۔

عمران خان نے کہا کہ جب کوئی شریف خاندان  کے احتساب کی بات کرتا ہے تو یہ دھمکیاں دیتے ہیں، دھمکیوں کا وقت گزر گیا اور قوم ان کی دھمکیوں کی فکر نہیں کرتی۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف جھوٹ بولنے پر شرمندگی کی بجائے کہتے ہیں ہم احتساب مانتے ہی نہیں۔

ADVERTISEMENT
 
 
 
 
Ad

 

چیرمین تحریک انصاف نے کہا کہ نواز شریف 30 سال سے کرپشن کررہے ہیں اور پھر الزام پوچھتے ہیں، ان پر نیب میں 12 کیسز موجود ہیں،مظلوم شکل بنانے سے کچھ نہیں بنے گا، دنیا اب بدل گئی ہے اور یہ سوشل میڈیا کا زمانہ ہے، منی لانڈرنگ دہری کرپشن ہوتی ہے کیونکہ اس کے ذریعے چوری کا پیسا باہر بھیجا جاتا ہے۔

عمران خان نے مزید کہا کہ سپریم کورٹ نے قطری کے خط کی دھجیاں اڑادی ہیں، نوازشریف اب اڈیالہ جیل جائیں گے اور ان کے لیے  جیل میں جگہ تیار ہورہی ہے۔ اٹارنی جنرل کے مطابق عدالت کے سامنے جھوٹ بولنے پر 7 سال کی سزا ہوتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے فیصلہ کے خلاف جو کھڑا ہوگا وہ آئین کی خلاف ورزی کرے گا جب کہ ہمارے سڑکوں پر نکلنے کی نوبت نہیں آئے گی۔

 


Published on 20 July 2017

پاناما کی لڑائی میں کوئی بھی فاتح بن کر نہیں نکلے گا، سعد رفیق

راولپنڈی: 

وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ ایسا ہرگز نہیں ہو سکتا کہ صرف ایک خاندان کا احتساب ہو اور باقی بچ جائیں، پاناما کی لڑائی میں کوئی بھی فاتح بن کر نہیں نکلے گا۔

 

راولپنڈی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ ہماری جانب سے جمہوریت کو نقصان نہیں پہنچ سکتا لیکن الزام تراشی کی سیاست لوگوں کو جمہوریت سے مایوس کر رہی ہے جب کہ پی ٹی آئی میں وہ لوگ بھی ہیں جو پچھلے دورمیں سَر تا پاوں کرپشن میں ڈوبے ہوئے تھے اور عمران خان کے دائیں بائیں کھڑے ہو کر نیا پاکستان بنانے کی باتیں کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ایسا ہر گز نہیں ہو سکتا کہ صرف شریف خاندان کا احتساب ہو اور دیگر لوگ بچ جائیں، اگر یہ بات چل نکلی تو باقی حکمران خاندان تک جائے گی اور اس لڑائی میں کوئی بھی فاتح بن کر نہیں نکلے گا۔

سعد رفیق نے کہا کہ جے آئی ٹی پر تحفظات کے باوجود پیش ہوئے، عمران خان پہلے دھرنے دیتے تھے اور اب کرپشن کا رونا روتے ہیں، اگر کرپشن کا الزام ہوتا تو کسی پراجیکٹ پر ہوتا، یہ نہیں ہو گا جو وفات پا گئے ہیں ان کے کھاتے بھی کھلوائے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ حیرت اس بات پر ہے کہ چوری کی چُوری کھا کر جوان ہونے والے بلاول بھی کرپشن کی بات کرتے ہیں۔

ADVERTISEMENT
 
 
 
 
Ad

 

وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ معلوم نہیں تھا افتخار چودھری بحالی کے بعد نیا طریقہ کار اختیار کریں گے جب کہ ارسلان افتخار مقدمے میں قائم انصاف کے پیرا میٹرز پر بھی جے آئی ٹی بننی چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سیاسی جماعتوں وکلا اور سول سوسائٹی نے عدلیہ کی بحالی کی تحریک چلائی جو جائز تھی۔


Published on 20 July 2017

تحریک انصاف نے پی پی کی ایک اوروکٹ گرا دی

اسلام آباد: 

سابق ایم این اے ڈاکٹر سمعیہ امجدنے تحریک انصاف میں باضابطہ شمولیت کا اعلان کردیا۔

 

ڈاکٹر سمعیہ امجد نے بدھ کو اسلام آباد میں نعیم الحق اور عبدالعلیم خان سے ملاقات کی۔ ملاقات میں انھوں باضابطہ طور تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا۔ اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ میں چیئرمین تحریک انصاف عمران کے وژن ، بصیرت اوران کے منشور کے ساتھ مکمل طور پر متفق ہوں۔ تحریک انصاف کے دونوں رہنمائوں نے ان کا خیر مقدم کرتے ہوئے ان کی شمولیت کو تحریک انصاف میں قابل قدر اضافہ قرار دیا۔