Published on 04 March 2015

وفاقی اور صوبائی حکومتیں بلدیاتی نظام سے خوفزدہ ہیں، الطاف حسین

ندن: متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے کہا ہے کہ آج ملک میں کہنے کو جمہوریت ہے درحقیقت وفاقی اور صوبائی حکومتیں بلدیاتی  نظام سے خوفزدہ  ہیں۔

لندن سے جاری بیان کے مطابق ایم کیو ایم کی رابطہ کمیٹی کے ارکان سے بات کرتے ہوئے الطاف حسین کہا کہ پانی کوذخیرہ کرنے کے لئے دنیا بھرمیں ڈیم بنائے جاتے ہیں، ہم اکیسویں صدی کے جدید تقاضوں کے تحت ان طریقوں کو اختیار کرنے کے لئے تیار نہیں ہیں جنہیں استعمال کرکے دنیا روز بروز ترقی کی منزلیں طے کرتی چلی جارہی ہے ۔ وہ  حکومت سے مطالبہ کرتے رہے ہیں کہ پانی کے مسئلے کے حل کے لئے ملک بھر میں  چھوٹے چھوٹے ڈیموں کا جال بچھا دیا جائے۔ وہ دعوے سے کہتے ہیں کہ اگرایسا ہوگیا تو  ملک بھر کے عوام پانی کی قلت سے نجات پالیں گے۔

الطاف حسین نے کہا کہ آج ملک میں کہنے کو جمہوریت ہے۔ وفاقی اور صوبائی جمہوری حکومتیں لوکل باڈیز کے نفاذکے مطالبے سے خوفزدہ  ہیں۔ صورت حال یہ ہے کہ ملک میں صحت کی سہولتیں ناپید ہیں، تعلیمی نظام انتہائی بوسیدہ اور غیر مؤثر ہے۔ گاڑیوں میں گیس سلنڈر کی تنصیب کی چیکنگ کاکوئی نظام نہیں ہے اوربسوں ، ویگنوں اور دیگر گاڑیوں میں لگے ہوئے ناقص گیس سلنڈر چلتے پھرتے بموں کی شکل اختیارکرچکے ہیں جن کے ذریعے معصوم لوگوں کی جانوں سے کھیلنے کا عمل روز مرہ کا معمول بن چکا ہے۔


Published on 14 January 2015

وزیراعظم 19 جنوری کو کراچی کا ایک روزہ دورہ کریں گے

راچی: وزیراعظم نوازشریف 19 جنوری کو کراچی کا ایک روزہ دورہ کریں گے جس میں وہ قومی ایکشن پلان سے متعلق اہم اجلاس کی صدارت کریں گے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق وزیراعظم نوازشریف 19 جنوری کو ایک روزہ دورے پر کراچی پہنچیں گے جہاں وہ گورنر ہاؤس میں ہونے والے قومی ایکشن پلان سے متعلق اجلاس کی صدارت کریں گے جس میں گورنر، وزیراعلیٰ سندھ ، اہم صوبائی وزرا سمیت اعلیٰ عسکری حکام اور پولیس رینجرز کے سربراہان بھی شریک ہوں گے، ذرائع کے مطابق اجلاس کے موقع پر کراچی میں امن وامان کی صورتحال سمیت شہر میں جاری ٹارگٹڈآپریشن میں ہونے والی پیش رفت کا بھی جائزہ لیا جائے گا۔

ذرائع نے بتایا کہ وزیراعظم کے دورے کے باعث سندھ اسمبلی کا 19 جنوری کو ہونے والا اجلاس ملتوی کردیا گیا ہے جو اب 21 جنوری بروز بدھ کو ہوگا۔


Published on 14 January 2015

بھارت میں زہریلی شراب پینے سے 22 افراد ہلاک، درجنوں کی حالت تشویش ناک

کھنو: بھارتی ریاست اترپردیش میں زہریلی شراب پینے سے 22 افراد ہلاک جبکہ 120 سے زائد کی حالت تشویش ناک ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست اتر پردیش کے دارالحکومت لکھنو کے مضافاتی گاؤں ملیح آباد کے لوگ کرکٹ میچ دیکھنے کے لئے موجود تھے، اس دوران شائقین میں شراب کے دور بھی چل رہے  تھے۔ شراب پینے والوں کی حالت بگڑنے پر انہیں اسپتال لایا گیا جہاں 22 ہلاک ہوگئے، اسپتال میں اب بھی 122 افراد زیر علاج ہیں جن میں 40 کی حالت انتہائی خراب ہے۔

پولیس کا کہناہے کہ زہریلی شراب پینے سے17 ہلاکتیں ہوئی ہیں، زہریلی شراب بیچنے والے کو حراست میں لے لیا گیا ہے جبکہ اس کے قبضے سے بڑی مقدار میں زہریلی شراب بھی برآمد ہوئی ہے۔

Published on 29 November 2014

فن لینڈ کی پارلیمنٹ میں ہم جنس پرستوں کی شادی کو قانونی درجہ دینے کی قرارد داد منظور

یلسنکی: فن لینڈ نے عوامی دباؤ کے بعد ہم جنس پرستوں کی آپس میں شادی کو قانونی قرار دینے کی قرارداد منظور کرلی ہے جس پر شادی کی خواہش رکھنے والے ہم جنس پرستوں نے خوشی کا اظہار کیا ہے۔

فن لینڈ کی پارلیمنٹ نے عوام کے دباؤ پر ہم جنس پرستوں کی شادی کو قانونی قرار دیئے جانے کی قرار داد کو 105 ووٹوں سے منظور کرلیا جب کہ مخالفت میں 92 ووٹ ڈالے گئے۔ اس طرح اب فن لینڈ میں  ہم جنس پرستوں کی شادی کو قانونی درجہ دینے کا راستہ صاف ہوگیا ہے اور یوں شمالی یورپ کا یہ آخری ملک بھی ان ممالک کی صف میں شامل ہوگیا جہاں ہم جنس پرستوں کی شادی کو قانونی قراردیا جا چکا ہے۔

اس موقع پر فن لینڈ کے وزیر اعظم الیگزینڈر اسٹب کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ سے بل کا پاس ہونا عوامی طاقت کی  بہترین مثال ہے جب کہ دوسری جانب قراداد کی مخالفت کرنے والی نیشنلسٹ فینس پارٹی نے اسے فن لینڈ کی تباہی قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ ہماری اقدار کو مکمل طور پر تباہ کیا جا رہا ہے۔

Published on 29 November 2014

نائیجیریا کی مسجد میں دھماکے سے جاں بحق افراد کی تعداد 120 ہوگئی

ابوجا: نائیجیریا کی مسجد میں نماز جمعہ کے دوران 2 خودکش دھماکوں کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 120 ہو گئی جب کہ 270 افراد زخمی ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق نائیجیریا کے شمالی شہر کانو کی مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے دوران ہونے والے 2 خود کش حملوں کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 120 ہو گئی ہے جب کہ 270 افراد زخمی ہیں جنہیں مختلف اسپتالوں میں طبی امداد دی جا رہی ہے۔ دوسری جانب ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ متعدد زخمیوں کی حالت تشویشناک ہونے کے باعث ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

سرکاری حکام کے مطابق ابھی تک کسی بھی گروپ کی جانب سے حملہ کی ذ مہ داری قبول نہیں کی گئی لیکن اس بات کا امکان ہے کہ حملہ جنگجو تنظیم بوکو حرام کے شدت پسندوں نے کیا جو اس سے قبل بھی اس طرح کی کاروائیوں میں ملوث رہے ہیں۔

واضح رہے کہ کانو کی جامع مسجد میں گزشتہ روز نما جمعہ کی ادائیگی کے دوران 2 خود کش حملہ آوروں نے خود کو دھماکا خیز مواد کی مدد سے اڑا دیا جب کہ دیگر ملزمان نے اندھا دھند فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں بڑی تعداد میں افراد جاں بحق ہوئے۔

Published on 27 November 2014

ایران اورعالمی طاقتیں ایک بار پھر جوہری پروگرام پرکسی معاہدے پرنہ پہنچ سکیں

ویانا: جوہری پروگرام پر ایران اور6 عالمی طاقتیں ایک بار پھر  کسی  معاہدے  پر پہنچنے میں  ناکام ہوگئی ہیں جس کے بعد مذاکراتی عمل میں  مزید 7 ماہ کی توسیع کردی گئی ہے۔

ویانا میں ایران اور 6عالمی طاقتوں کے درمیان ایرانی جوہری پروگرام سے متعلق  اجلاس ایک بار پھر فریقین کے درمیان  اختلافات کے باعث  کسی نتیجے پر پہنچے بغیر ختم ہوگیا ۔ کئی گھنٹوں جاری رہنے والے  اجلاس کے اختتام پر عالمی طاقتیں   اور ایران بات چیت کے عمل کو مؤثر بنانے اور کسی ٹھوس معاہدے پرپہنچنے  کے لیے ایک دوسرے کو مزید7 ماہ کی مہلت پررضامند ہوگئے۔

برطانوی وزیر دفاع فلپ ہیمنڈ نے اجلاس کے بعد صحافیوں سے بات  کرتے ہوئے کہا کہ ان کا خیال تھا کہ آئندہ سال مارچ تک اختلافی مسائل پر قابو پالیا جائے گا لیکن سب اس بات پر متفق تھے کہ کچھ تکنیکی مسائل  ایسے ہیں جن پر اتفاق رائے کے لیے مزید وقت درکار ہے لہذا بات چیت کے عمل کو 30 جون 2015 تک مکمل کرنے پراتفاق کیا گیا۔

برطانوی وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان ایک سال قبل ہونے والا عارضی معاہدہ ’’جوائنٹ پلان آف ایکشن‘‘ جاری رہے گا جس کے تحت ایران نے  یورنیم کی افزودگی کا عمل روک دیا ہے اور اس کے نتیجے میں ایران پر لگی معاشی پابندیوں کو محدود پیمانے پر نرم کردیا گیا ہے۔ اس نرمی سے ایران آئندہ 6 ماہ میں70 کروڑ ڈالر کا فائدہ اٹھا سکے گا۔ ان کا کہنا تھاکہ امید ہے ایران معاہدے کی پابندی کرتے ہوئے یورینیم کی افزودگی کا عمل دوبارہ شروع نہیں کرے گا۔


Published on 14 January 2015

بھارت میں دریائے گنگا سے 104 لاشیں ملنے کے بعد تحقیقات کا حکم دیدیا گیا

لکھنؤ: بھارتی ریاست اترپردیش کے ضلع اوناؤ میں دریائے گنگا سے 104 لاشیں ملنے کے بعد حکام نے معاملے کی تحقیقات شروع کردی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق دریائے گنگا سے منگل کی رات گئے تک 35 لاشیں ملی تھیں تاہم آج صبح تک دریا سے ملنے والی لاشوں کی تعداد 104 ہوگئی جس پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے حکومت نے معاملے کی تحقیقات کا حکم دے دیا، اس سے قبل کانپور کے آئی جی پولیس کا کہنا تھا کہ لاشوں کا تعلق ایسے خاندان سے ہے جو شمشان گھاٹ کے اخراجات برداشت نہیں کرسکتے اس لئے ان کے ورثا نے لاشیں دریا میں بہا دیں.

دوسری جانب دریائے گنگا سے لاشیں ملنے پر گنگا بچاؤ موؤمنٹ کی جانب سے حکومت کے خلاف شدید احتجاج کیا گیا جب کہ مظاہرین نے گنگا میں لاشیں پھینکے جانے کے خلاف نعرے بھی لگائے، مظاہرین کا کہنا تھا کہ دریا میں لاشیں پھینکے سے پانی آلودہ ہورہا ہے اس لئے فوری طور پر اس سلسلے کو روکا جائے۔

واضح رہے کہ دریائے گنگا سے لاشیں ملنے کا واقعہ ایسے وقت پر پیش آیا کہ جب ہندواپنا مذہبی تہوار منانے والے تھے جس میں ہندوؤن کا ماننا ہے کہ گنگا میں غوطہ لگا کر وہ اپنے گناہوں کو دھو ڈالتے ہیں۔

 
Published on 29 November 2014

سوڈان میں اونٹوں پر سوار حملہ آوروں نے 15 افراد کو قتل کر دیا

خرطوم: سوڈان کے جنوبی علاقے دارفر میں اونٹوں پر سوار مسلح افراد نے 15 افراد کو قتل جب کہ 10 کو زخمی کر دیا۔ 

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سوڈانی حکام کا کہنا ہے کہ سوڈان کے جنوبی علاقے دارفر کے قریب حمادی کے علاقے میں اونٹوں پر سوار مسلح افراد نے گاڑیوں پر اندھا دھند فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں 15 شہری ہلاک جب کہ 10 زخمی  ہو گئے۔ امدادی ٹیموں کے اہلکاروں نے زخمی ہونے والوں کو فوری طور پر قریبی اسپتال منتقل کیا جہاں انہیں طبی امداد دی جا رہی ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ شہریوں پر حملے کی وجوہات جاننے کے لئے کمیشن تشکیل دے دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ  اقوام متحدہ کے اعداد و شمار کے مطابق دارفر میں 2003 سے  پانی اور دیگر معدنیات  پر  علاقائی قبائل اور حکومت کے درمیان ہونے والے تنازع میں اب تک 3 لاکھ کے قریب افراد ہلاک جب کہ 20 لاکھ سے زائد لوگ در بدر ہو چکے ہیں۔

Published on 29 November 2014

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج پرحملے میں پاکستان کے ریاستی عناصرملوث ہیں، بھارتی ہرزہ سرائی

ئی دہلی: بھارت نے اپنے جرائم پر پردہ پوشی کے لئے پاکستان پر بے بنیاد الزام لگانے کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے 2 روز قبل مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے قافلے پر حملے میں پاکستان کے ریاستی اداروں کو ملوث قرار دیا ہے۔

بھارتی ریاست آسام کے شہر گوہاٹی میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے روایتی الزام تراشی کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی جانب سے بھارت کو غیر مستحکم کرنے کی سازشیں کی جارہی ہیں، پاکستان نے مقبوضہ وادی کے قصبے ارنیا میں دو روز قبل بھارتی فوج  پر حملے سے لاتعلقی کا اظہار کرتے ہوئے اسے غیر ریاستی عناصر کی کارروائی قرار دیا ہے، درحقیقت اس میں پاکستان کے ریاستی عناصر ملوث تھے۔

راج ناتھ سنگھ کا کہنا تھا کہ داعش اب دنیا کے تمام ممالک کے لئے بڑا سیکیورٹی چیلنج ہے اور انتہائی خطرناک بات یہ ہے کہ نوجوانوں کا ایک بڑا حصہ اس تنظیم کے نظریات کا حامی ہے۔ بھارتی حکومت کسی بھی دہشت گرد تنظیم کو اپنے ملک میں قدم جمانے نہیں دے گی اور ان کا پوری طاقت کے ساتھ مقابلہ کیا جائے گا۔

Published on 01 November 2014

سعودی عرب میں منشیات اسمگل کرنے کے جرم میں ایک اور پاکستانی کا سر قلم

ریاض: سعودی عرب میں منشیات اسمگل کرنے کے جرم میں ایک اور پاکستانی کا سر قلم کردیا گیا جس کے بعد گزشتہ 2 ہفتوں کے دوران سر قلم کئے جانے والے پاکستانیوں کی تعداد 4 ہوگئی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق سعودی وزارت داخلہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ محمد گل رحما نامی پاکستانی کو منشیات کی بھاری مقدار اسمگل کرنے کی کوشش کے دوران گرفتار کیا گیا تھا اور جرم ثابت ہونے پر ان کا سر مشرقی صوبے قطیف میں قلم کیا گیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ 2 ہفتوں کے دوران منشیات اسمگل کرنے کے جرم میں ہی 3 اور پاکستانیوں کے سر بھی قلم کئے جاچکے ہیں جبکہ رواں سال مختلف جرائم میں سر قلم کئے جانے والے مجرمان کی تعداد 61 ہوگئی ہے۔